موٹر وے زیادتی کیس

Sharing is caring!

0
(0)

ان جنگلی درندوں کو جنگلی درندوں اور بھیڑیوں کے آگے ہی ڈالو،اور اس وقت تک نگرانی کرو جب تک وہ بھیڑیے اور شیر ان کتوں کو چیڑ پھاڑ کر انکے جسم کی آخری بوٹی نہ چیر ڈالیں۔جو بھی انسان درندہ بن جائے تو اسکو درندے کے آگے ہی ڈالو۔حکومت کو چاہئے کہ ایسا ہی کرے۔قیدیوں سے جیلیں نہ بھری جائیں بلکہ درندوں کے آگے پھینک دیا جائے۔تاکہ خس کم جہاں پاک ہو۔اور گندگی ساتھ کے ساتھ ہی دفن ہوتی رہے۔

How useful was this post?

Click on a star to rate it!

Average rating 0 / 5. Vote count: 0

No votes so far! Be the first to rate this post.

As you found this post useful...

Follow us on social media!

Leave a Reply

avatar
  Subscribe  
Notify of
shares